فاسٹ نیوز : جے آئی ٹی نے سپریم کورٹ میں درخواست پیش کی ہےاور کہا ہےکہ تحقیقات مقررہ ساٹھ دنوں میں نہیں ہوسکتیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ ریاستی ادارے رکارڈ کی فراہمی میں تاخیر کررہے ہیں، ساٹھ میں سے تیس دن سے زائد کاوقت گزر چکا ہے،رکاوٹوں کے باعث تحقیقات مقررہ ساٹھ دنوں میں نہیں ہوسکتیں ۔

بنچ کےرکن جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے ہیں کہ جے آئی ٹی کے رکارڈ ٹیمپرنگ کے الزامات ہیں ، رکارڈ کو بدلا جارہاہے ، جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے کہ ویڈیو رکاڈنگ کا مطلب ہے کہ بیان حقائق کے مطابق رہے ، سیکشن 161 ویڈیو بنانے کی ممانعت نہیں کرتا۔

جسٹس اعجازالحسن نے کہاکہ کچھ اداروں پر رکارڈ تبدیل کرنے کا الزام سنگین ہے، عدالت نے استفسار کیا کہ ریاستی اداروں کے سربراہ تحقیقات کے بعد عدالت کو خط کیوں لکھتے ہیں؟اس موقع پر جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ اگر رکاوٹیں کھڑی کی گئیں تو ٹائم فریم میں کام مکمل نہیں ہو گا

Advertisements

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s