فاسٹ نیوز : فرانس میں صدارتی انتخابات کے بعد آج ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لیے پولنگ کا آغاز ہوگیا ہے جس میں 47ملین ووٹرز اپناحق رائے دہی استعمال کریں گے۔

صدر میکرون کی سیاسی جماعت بھی پارلیمانی انتخابات میں حصہ لے رہی ہے۔ دوسرے مرحلے کے لیے پولنگ 18 جون کو ہوگی۔

قومی اسمبلی کی 577نشستوں کیلئے تمام چھوٹی بڑی سیاسی جماعتوں کے 6500امیدوارآج کے انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔

انتخابات سے قبل فرانس کے صدرمیکرون کی سیاسی جماعت آن مارش کو ملک بھرسے 15ہزار سے زائد ٹکٹ کے خواہشمند افراد نے درخواستیں دیں ، تاہم میکرون نے 526امیدواروں کو انتخابی معرکہ کیلئے چنا ہے۔

پارلیمانی انتخابات میں کامیاب امیدوار کو کم ازکم12 اعشاریہ 5 فیصد ووٹ لینا لازم ہوگا جس میں کامیاب امیدوار18جون کو دوسرے مرحلے میں ایک دوسرے کے مدمقابل ہوں گے۔

سیاسی مبصرین اور مختلف سروے منعقد کرنیوالے اداروں کے ذرائع کاکہنا ہے کہ قومی اسمبلی کے انتخابات میں فرانس کے صدر میکرون کی جماعت آن مارش 280 سے 300کے قریب نشستیں لینے میں کامیاب ہوجائے گی کیونکہ انہوں نے 52فیصد نئے چہرے متعارف کرائے ہیں اور ان کی جماعت میں سوشلسٹ ،ری پبلکن اوردیگرجماعتوں کے اہم رہنما شامل ہوچکے ہیں۔

میکرون کی جماعت کو289ارکان کی اکثریت درکار ہے یہ انتخابات ان کے لئے انتہائی اہمیت کے حامل ہیں ۔

دوسری طرف سخت گیرموقف رکھنے والی سیاسی جماعت نیشنل فرنٹ کو تقریباً 20ووٹرزکی حمایت ہے، سوشلسٹ پارٹی اس کے اتحادی ملک بھرسے تقریباً40 سے 50نشستیں لینے میں کامیاب ہوتےدکھائی دے رہے ہیں۔

فرانس کے قومی اسمبلی کے انتخابات میں نیشنل فرنٹ کی سربراہ اور صدارت انتخابات میں ناکام ہونیوالی مارلی لوپن بھی قومی اسمبلی کے انتخابات میں حصہ لے رہی ہیں جنہیں اپنی کامیابی کاقوی یقین ہے

Advertisements

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s