فاسٹ نیوز : پاک سرزمین پارٹی کے سندھ حکومت سے مذاکرات ناکام ہونے کے بعدریلی پر پولیس نے شیلنگ کی اور واٹر کینن کا استعمال کیااور پارٹی سربراہ مصطفیٰ کمال سمیت مرکزی قیادت کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مرتضی وہاب ،وقار مہدی اور راشد ربانی پر مشتمل پی پی وفد نے پی ایس پی رہنمائوں سے شارع فیصل پر عائشہ باوانی اسکول کے قریب مذاکرات کئے ،جو ناکام ہوئے تو پولیس نے ریلی کے شرکاء کو منتشر کرنے کے لئے وقفے وقفے سے شیلنگ کی ۔

ایک طرف پولیس او ر پی ایس پی کارکنان کے درمیان آنکھ مچولی جاری ہے ،پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال کارکنوں کی بڑی تعداد کو لے کر وزیراعلیٰ ہائوس کی جانب پیدل روانہ ہوئے جنہیں پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پولیس نے پی ایس پی رہنما،انیس قائمخانی، ڈاکٹر صغیر اور رضا ہارون سمیت کئی کارکنوں کو حراست میں لے لیا گیا ہےجبکہ کارکنوں کو لانے والی بسوں کے ڈرائیوروں کو انہیں سڑک خالی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

پی ایس پی کی قیادت جو 16مطالبات کی منظوری کے لئے سڑکوں پر نکلی تھی ،اس نے ایف ٹی سی سے ریلی کا آغاز کیا ،اس موقع پر مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ہم اپنے حقوق مانگنے نکلے ہیں،پولیس کسی کو کچھ نہ کہے

Advertisements

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s