فاسٹ نیوز : سرگودھا میں گدی نشین نے ساتھیوں سے مل کر مبینہ طور پر ایک ہی خاندان کے6 افراد سمیت 20 مریدوں کو قتل اور 3 کو زخمی کر دیا۔گدی نشین عبدالوحید سمیت 3 افراد کو گرفتار کر لیا۔ گرفتار افراد نے اعتراف جرم کرلیا۔ قتل کیے گئے 8 مریدوں کی لاشیں پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دی گئیں۔

سرگودھا کے ڈپٹی کمشنر لیاقت علی چٹھہ کے مطابق نواحی علاقے 95 شمالی میں قائم دربار مبینہ طور پر علی محمد گجرکے گدی نشین عبدالوحید نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ درگاہ پر موجود 6 خواتین سمیت 22 افراد کو کو نشہ آور چیز کھلا کر بےہوش کیا اور پھر انہیں ڈنڈوں اور خنجر کے وار کیے گئے۔

عبدالوحید کے تین مریدوں نے بھاگ کر جان بچائی، اسپتال میں تینوں زخمی افراد کی حالت تسلی بخش ہے۔

پولیس کے مطابق قتل ہونے والے 8 افراد کا پوسٹ مارٹم مکمل کر نے کے بعد ان کی لاشیں ورثا کے حوالے کردی گئیں ہیں۔ قتل ہونے والوں میں ایک ہی خاندان کے 5 افراد بھی شامل ہیں۔

ڈپٹی کمشنر سرگودھا کہتے ہیں عبدالوحید مریدوں پر تشدد کر کے کہتا تھا کہ ان کا جسم پاک ہونے لگا ہے۔ واقعے میں گدی نشینی کےتنازع کاپہلو نظرنہیں آتا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ملزم عبدالوحید الیکشن کمیشن سرگودھا کا ملازم ہے،اس سے آفس کارڈ بھی برآمدہوا ہے۔

ادھر مقامی افراد کا کہناہے کہ عبدالوحید مہینے میں ایک دو بار درگاہ پر آتا تھا۔ مریدوں پر تشدد کر تا تھا، انہیں برہنہ کر کے آگ بھی لگاتا تھا۔

قتل کئے گئے11افراد کا تعلق سرگودھا، 2 کا اسلام آباد،2 کا تعلق لیہ، ایک کا میانوالی، ایک اور شخص کا تعلق پیر محل سے ہے۔ ایک خاتون کی شناخت نہیں ہو سکی

Advertisements

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s