فاسٹ نیوز : وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ آج پاکستان اور دنیا بھر میں ’دین امن‘ کے نام پر نفرت اور انتہاپسندی پھیلائی جارہی ہے، ریاست دہشت گردوں کا کھوج لگارہی ہےلیکن دہشت گردی کا خاتمہ علماء کے کردار کے بغیر ممکن نہیں۔

جامعہ نعیمیہ لاہور میں سیمینار سے خطاب میں وزیراعظم نے کہا کہ یہاں آنا میرے لیے روحانی سکون کاباعث بنتا ہے ،جامعہ نعیمیہ میں خون کی ہولی کھیلنےوالوں کا اسلام سے کیسے تعلق ہوسکتا ہے ۔

ان کا کہناتھاکہ لوگوں نے اپنے مذموم مقاصد کے لیے دین کو یرغمال بنا رکھا ہے ،دشمن کے ہاتھ ٹوٹ گئے جیسے ابو لہب کے ہاتھ ٹوٹے تھے ،چند اکا دکا رہ جانےوالے دہشت گرد بھی انجام کو پہنچیں گے ۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے لیے دینی دلائل تراشے جاتے ہیں جسے علماء نے رد کرنا ہے ،دہشت گردوں نے جہاد کے پاکیزہ تصور کو مسخ کیا۔

نوازشریف کا خطاب میں کہناتھاکہ دہشت گردی کی بنیادیں انتہا پسندی میں ہیں،علماء مذہب کے نام پر پھیلائے گئے فتنوں کا دروازہ بند کرسکتے ہیں ،انہیں اسلام کا اصل بیانیہ عوام کےسامنے رکھنا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ علماء نے صرف فرقہ پرستی ہی نہیں ،بلکہ صوبائیت اور علاقائیت پھیلانےوالوں کے خلاف بھی آواز اٹھانی ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s